غیرملکیوں کے مسائل پر پاکستانی کا سعودی اخبار کو دلچسپ خط

news-1415696477-8352سعودی عرب کے بعض علاقوں میں ایک عرصے سے یہ تشو یشناک مسئلہ سامنے آرہا ہے کہ نوجوان مہنگی اور بڑی بڑ ی گاڑیو ں پر جوق در جوق سوار ہو کر سڑکوں کو اپنے کرتب کے میدن بنارہے ہیں اور اپنے ساتھ دیگر لوگوں کے لئے بھی شدید خطرہ ثابت ہو رہے ہیں۔
مملکت میں مقیم غیر ملکی شہریوں کے لئے یہ صورتحال خصوصا ًپریشان کن ہے کیونکہ جب وہ خطرے میں ہو ں یا انہیں ہراساں کیا جارہا ہو تو وہ نہیں جانتے کہ مدد کے لئے کسے پکاریں ۔ان پریشان کن حالات کا اندازہ اس کھلے خط سے کیا جا سکتاہے جو ایک غیرملکی نے ایک سعودی اخبار کے نام تحریر کیا ہے۔
نوید سعید نامی ان صاحب نے اپنے خط میں لکھا ہے کہ ان کے رہائشی علاقہ میں نوجوانوں کے قابو گروہ گاڑیوں کے ایک خطرناک کرتب کر رہے تھے جس سے پریشان ہو کر انہوں نے ٹریفک پولیس افسران سے رابطہ کیا۔باوجود اس کے کہ انہوں نے اپنی ٹوٹی پھوٹی عربی میں مسئلہ سمجھادیا،پولیس نے کوئی بھی ایکشن لینے سے معذ رت کی اور تجویز دی کہ 993یا999پر رابطہ کریں۔
جب بتائے گئے نمبروں پر رابطہ کیا گیاتو جواب ملا کہ وہ بات سمجھنے سے قاصر ہیں اور جب انہیں انگریزی میں بتانے کی کوشش کی گئی تو بتایا گیا کہ وہ انگریزی با لکل نہیں جانتے۔ایک طویل کوشش کے بعد بالآخر مایوسی کے سوا کوئی نتیجہ برآمد نہ ہوسکا۔غیر ذمہ ڈرائیوروں کی وجہ سے مسلسل عذاب کا شکار یہ غیرملکی شہر ی حکام سے سوا ل پوچھ رہے ہیں کون ان کی مددکو آئے گا اور وہ کس سے سوال کریں ۔

Be the first to comment

Leave a Reply

Your email address will not be published.


*